41

میشا شفیع کو دھمکیاں موصول، سوشل میڈیا اکانٹس بند کردیے

کراچی: (اُردو نیوز) گلوکار علی ظفر پر جنسی ہراسانی کا الزام لگانے والی نامور پاکستانی گلوکارہ و اداکارہ میشا شفیع نیاپنے سوشل میڈیا اکانٹس بند کرنے کی وجہ بتاتے ہوئے کہا کہ دھمکیاں ملنے کے باعث سوشل میڈیا اکانٹس بند کیے۔
میشا شفیع چند روز قبل اپنے فیس بک اور انسٹا گرام اکانٹس بند کرنے کے باعث شدید تنقید کی زد میں آگئی تھیں لہذا انہوں نے اپنے اکانٹس بند کرنے کی وجہ خود ہی بتادی۔ میشا کا کہنا ہے کہ علی ظفر پر جنسی ہراسانی کا الزام لگانے کے بعد انہیں سوشل میڈیا پر شدید تنقید کا نشانہ بنایا جارہاتھااور انہیں دھمکیاں دینے کے ساتھ پریشان بھی کیا جارہاتھا۔ لہذا وہ خود کو، اپنے گھروالوں کو خاص طور پراپنے دونوں بچوں کو دھمکیاں دینے والوں سے محفوظ رکھنا چاہتی تھی اسلیے انہوں نے اپنا فیس بک اور انسٹاگرام اکانٹ بند کرنیکا فیصلہ کیا تاہم ٹوئٹر اکانٹ ابھی بھی بحال ہے۔
علی ظفر اور میشا شفیع میں وجہ تنازع بننے والی ویڈیو منظر عام پر
دوسری جانب میشا شفیع کے وکیل احمد پنسوٹا نے ایک انٹرویو کے دوران میشا کے کینیڈا شفٹ ہونے کی خبروں کی تردیدکرتے ہوئے کہا ہیکہ ان کی موکل یہیں پر رہ کرمقدمات کا سامنا کریں گی۔ وکیل پنسوٹا نے مزید کہا بہت سارے کیسز میں اگر دوسری پارٹی کا کیس کمزور ہو تواس طرح کی افواہیں ان کا کیس مضبوط بنانے میں اہم کردار ادا کرتی ہیں۔
میشا شفیع نے اب تک خاموش رہنے کی وجہ بتادی
پنسوٹا نے میشا شفیع کی کہی ہوئی بات اپنی بات میں شامل کرتے ہوئے کہا میشا ایک آرٹسٹ ہیں اور وہ اپنے کام کیلئے جہاں چاہیں سفر کرسکتی ہیں لیکن وہ کسی بھی ملک میں منتقل ہونے کی منصوبہ بندی نہیں کررہیں۔ پنسوٹا نے یہ انٹرویو اپنے ٹوئٹر اکانٹ پر ری ٹوئٹ کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں